لمبی رات سے جب ملی اس کی زلف دراز

عمیق حنفی

لمبی رات سے جب ملی اس کی زلف دراز

عمیق حنفی

MORE BYعمیق حنفی

    لمبی رات سے جب ملی اس کی زلف دراز

    کھل کر ساری گتھیاں پھر سے بن گئیں راز

    اس کی اک آواز سے شرمایا سنگیت

    سارنگی کا سوز کیا کیا ستار کا ساز

    میرا قائل ہو گیا یہ سارا سنسار

    رنگ ناز میں جب ملا میرا رنگ نیاز

    سازوں کا سنگیت کیا پایل کی جھنکار

    کون سنے اس شور میں دل تیری آواز

    ان آنکھوں میں ڈال کر جب آنکھیں اس رات

    میں ڈوبا تو مل گئے ڈوبے ہوئے جہاز

    RECITATIONS

    نعمان شوق

    نعمان شوق

    نعمان شوق

    لمبی رات سے جب ملی اس کی زلف دراز نعمان شوق

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY