ان کی محفل میں ہمیشہ سے یہی دیکھا رواج

انور صابری

ان کی محفل میں ہمیشہ سے یہی دیکھا رواج

انور صابری

MORE BYانور صابری

    ان کی محفل میں ہمیشہ سے یہی دیکھا رواج

    آنکھ سے بیمار کرتے ہیں تبسم سے علاج

    میں جو رویا ان کی آنکھوں میں بھی آنسو آ گئے

    حسن کی فطرت میں شامل ہے محبت کا مزاج

    میری خاطر خود اٹھاتے ہیں وہ تکلیف کرم

    کون رکھتا ورنہ مجھ جیسے گنہ گاروں کی لاج

    میرے ہونے اور نہ ہونے پر ہی کیا موقوف ہے

    موت پر ان کی حکومت زندگی پر ان کا راج

    اف وہ عارض جس کے جلووں پر فدا مہر مبیں

    آہ وہ لب جن کو دیتے ہیں مہ و انجم خراج

    میں ہوں انورؔ ان کی ذات پاک کا ادنیٰ غلام

    ہے سر اقدس پہ جن کے رحمت یزداں کا تاج

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Jashn-e-Rekhta | 2-3-4 December 2022 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate, New Delhi

    GET YOUR FREE PASS
    بولیے