تازہ نظمیں

نظموں کا وسیع ذخیرہ-اردو شاعری کی ایک صنف


اردو میں نظم کی صنف انیسویں صدی کی آخری دہائیوں کے دوران انگریزی کے اثر سے پیدا ہوئی جو دھیرے دھیرے پوری طرح قائم ہو گئی۔ نظم بحر اور قافیے میں بھی ہوتی ہے اور اس کے بغیر بھی۔ اب نثری نظم بھی اردو میں مستحکم ہو گئی ہے۔


نظم
آ جانا
آبلہ
ابھی ہم خوبصورت ہیں
اپنی تلاش میں نکلے
اپنے قاتل کے لیے ایک نظم
اترن پہنو گے
آج تنہائی نے تھوڑا سا دلاسہ جو دیا
اجنبی
اجنبی فرمائش
آخری سمت میں بچھی بساط
آخری قافلہ
اداسیوں کی رت
آدھا آدمی
ادھورے خواب
اردو
اردو زبان
اردوئے معلیٰ
اڑان سے پہلے
اس روز تم کہاں تھے
اس عہد کی بے حس ساعتوں کے نام
اس کا دل تو اچھا دل تھا
اسیر ذات روشنی
اضطراب
اعتراف
اک بے انت وجود
اک تیرے سوا
اکیلا
اگلی رت کی نماز
آگہی کی دعا
الاؤ
الف زبر َا
الوداع
امید
ان چاہی موت
انارکزم
انتساب
انتظار
انجام قصہ گو کا
اندھا اور دوربین
انڈا
آنسو
انکشاف
انہیں ڈھونڈو
اور تم دستکیں دیتے رہو
اے زمستاں کی ہوا تیز نہ چل
اے کے شیخ کے پیٹ کا کتا
ایک آواز
ایک چڑیا
ایک خیال کی رو میں
ایک دھندلی یاد
ایک علامت
ایک فلرٹ لڑکی
ایک لمبی کافر لڑکی
ایک مشورہ
ایک نظم
ایک نظم
ایک نظم
آئینہ دیکھنا
آئینے
آئینے سے جھانکتی بے چہرگی
بجھا رت
بغداد
بہ جواب پند نامہ
بھٹکا مسافر
بھوری مٹی کی تہہ کو ہٹائیں
بھولی ماں
بھیگا موسم
بے بسی
بے کراں
بیج
بیساکھی
پرستش
پرندہ کمرے میں رہ گیا
پرندے لوٹ آئے
پسند
پکاسو کا مشورہ
پند نامہ
پہلا منظر
پھول اور ستارا
پونجی
پیپل
پیش گوئی
تاریکیوں کا حساب
تجھے بھی یاد تو ہوگا
ترانۂ اردو
تشنگی
تعارف
تعبیر
تلاش
تم اپنی آنکھوں کو بند کر لو
تم آسماں کی طرف نہ دیکھو
تم آؤ گے
تماشہ
تمہاری یاد
تنہائی
تنہائی
تنہائی
تو میرا ہے
ٹوٹے شیشے کی آخری نظم
جاناں
seek-warrow-warrow-eseek-e1 - 100 of 303 items