aaj ik aur baras biit gayā us ke baġhair

jis ke hote hue hote the zamāne mere

رد کریں ڈاؤن لوڈ شعر

اب تو نہیں آسرا کسی کا

حفیظ جونپوری

اب تو نہیں آسرا کسی کا

حفیظ جونپوری

MORE BYحفیظ جونپوری

    اب تو نہیں آسرا کسی کا

    اللہ ہے اپنی بیکسی کا

    او آنکھ بدل کے جانے والے

    کچھ دھیان کسی کی عاجزی کا

    بیمار کو دیجئے تسلی

    یہ وقت نہیں جلی کٹی کا

    آپس میں ہوئی جو بد گمانی

    مشکل ہے نباہ دوستی کا

    بالیں سے کوئی اٹھا یہ کہہ کر

    انجام بخیر ہو کسی کا

    غم کا بھی قیام کچھ نہ ٹھہرا

    رونا کیا روئیے خوشی کا

    پہونچا ہی دیا کسی گلی تک

    اللہ رے زور بے خودی کا

    آخر کو شراب رنگ لائی

    چھپتا نہیں راز مے کشی کا

    اندھیرا حفیظؔ ہو رہا ہے

    بجھتا ہے چراغ زندگی کا

    مأخذ:

    Diwan-e-Hafeez(Rekhta Website) (Pg. 7)

    • مصنف: حفیظ جونپوری
      • اشاعت: 1903
      • ناشر: مطبع حکیم، گورکھپور
      • سن اشاعت: 1903

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Jashn-e-Rekhta | 8-9-10 December 2023 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate - New Delhi

    GET YOUR PASS
    بولیے