آج کے منتخب ۵ شعر

انہیں پتھروں پہ چل کر اگر آ سکو تو آؤ

مرے گھر کے راستے میں کوئی کہکشاں نہیں ہے

مصطفی زیدی

کل چودھویں کی رات تھی شب بھر رہا چرچا ترا

کچھ نے کہا یہ چاند ہے کچھ نے کہا چہرا ترا

T'was a full moon out last night, all evening there was talk of you

Some people said it was the moon,and some said that it was you

T'was a full moon out last night, all evening there was talk of you

Some people said it was the moon,and some said that it was you

ابن انشا

گھر سے نکل کر جاتا ہوں میں روز کہاں

اک دن اپنا پیچھا کر کے دیکھا جائے

بھارت بھوشن پنت

ہم تم میں کل دوری بھی ہو سکتی ہے

وجہ کوئی مجبوری بھی ہو سکتی ہے

بیدل حیدری

لگے منہ بھی چڑھانے دیتے دیتے گالیاں صاحب

زباں بگڑی تو بگڑی تھی خبر لیجے دہن بگڑا

حیدر علی آتش
آج کا لفظ

معتبر

  • mo'tabar
  • मो'तबर

معنی

reliable

مرے خدا مجھے اتنا تو معتبر کر دے

میں جس مکان میں رہتا ہوں اس کو گھر کر دے

لغت

Quiz A collection of interesting questions related to Urdu poetry, prose and literary history. Play Rekhta Quiz and check your knowledge about Urdu!

Recently, which of these following works has illistrated how history and civilization can nicely dovetail into the art of fiction?
Start Today’s Quiz

کیا آپ کو معلوم ہے؟

"گلابی اردو " کیا ہے اور ملا رموزی،(1896-1952) سے اس کا کیا رشتہ ہے ؟ گلابی اردو ملا رموزی کا دلچسپ طرز تحریر تھا, جو دراصل پرانے انداز کے  لفظ بہ لفظ ، ثقیل قسم کے  اردو ترجموں کی  شگفتہ پیروڈی تھا۔  ملا رموزی یعنی بھوپال کے صدیق ارشاد، مشہور صحافی، طنز نگار اور شاعر تھے۔  وہ اخباروں میں سیاسی اور سماجی موضوعات پر اپنی گلابی اردو  میں اس انداز سے  لکھتے تھے کہ برٹش حکومت کے پریس ایکٹ کی پابندی کی گرفت میں بھی نہیں  آتے تھے، اور اردو دانوں تک ان کی بات پہنچ بھی جاتی تھی۔ لیکن وہ اس انداز کے علاوہ عام آسان زبان میں عام لوگوں کے مسائل اور موضوعات پر بھی طنزیہ اور مزاحیہ مضامین لکھتے تھے جو بہت پسند کئے جاتے تھے۔بھوپال میں مدھیہ پردیش اردو اکادمی کا دفتر 'ملارموزی سانسکرتی بھون' نامی عمارت میں ہے۔ آجکل گلابی اردو  کی اصطلاح اردو میں علاقائ  الفاظ و لہجے  کی  آمیزش کے لئے بھی  استعمال ہونے لگی ہے۔

سابقہ مشمولات

آج کی پیش کش

مقبول رومانی شاعر ، ملکہ پکھراج نے ان کی نظم ’ ابھی تو میں جوان ہوں‘ کو گا کر شہرت دی ، پاکستان کا قومی ترانہ لکھا

ہم ہی میں تھی نہ کوئی بات یاد نہ تم کو آ سکے

تم نے ہمیں بھلا دیا ہم نہ تمہیں بھلا سکے

پوری غزل دیکھیں

ریختہ بلاگ

پسندیدہ ویڈیو
This video is playing from YouTube

دلاور علی آزر

Fayeda kya hai zamane mein | Dilawar Ali Aazar Shayari | Rekhta Studio

ویڈیو شیئر کیجیے

ای-کتابیں

اقبال دلہن

بشیر الدین احمد دہلوی 

1908 اخلاقی کہانی

کلیات انور شعور

انور شعور 

2015 کلیات

مغل تہذیب

محبوب اللہ مجیب 

1965

اودھوت کا ترانہ

 

1958 نظم

شمارہ نمبر۔002

ڈاکٹر محمد حسن 

1970 عصری ادب

مزید ای- کتابیں