aaj ik aur baras biit gayā us ke baġhair

jis ke hote hue hote the zamāne mere

رد کریں ڈاؤن لوڈ شعر

کوئل نیں آ کے کوک سنائی بسنت رت

آبرو شاہ مبارک

کوئل نیں آ کے کوک سنائی بسنت رت

آبرو شاہ مبارک

MORE BYآبرو شاہ مبارک

    کوئل نیں آ کے کوک سنائی بسنت رت

    بورائے خاص و عام کہ آئی بسنت رت

    وہ زرد پوش جس کوں بھر آغوش میں لیا

    گویا کہ تب گلے سیں لگائی بسنت رت

    وہ زرد پوش جس کا کہ گن گاوتے ہیں ہم

    شوخی نیں اس کی ناچ نچائی بسنت رت

    غنچے نیں اس بہار میں کڈوایا اپنا دل

    بلبل چمن میں پھول کے گائی بسنت رت

    ٹیسو کے پھول دشنۂ خونی ہوے اسے

    برہن کے جی کوں ہے یہ کسائی بسنت رت

    گائے ہنڈول آج کلاونت کھلس کھلس

    ہر تان بیچ کیا کے پھلائی بسنت رت

    بلبل ہوا ہے دیکھ سدا رنگ کی بہار

    اس سال آبروؔ کوں بن آئی بسنت رت

    مأخذ :
    • کتاب : Deewan-e-Aabro (Pg. 128)

    موضوعات

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Jashn-e-Rekhta | 2-3-4 December 2022 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate, New Delhi

    GET YOUR FREE PASS
    بولیے