aaj ik aur baras biit gayā us ke baġhair

jis ke hote hue hote the zamāne mere

رد کریں ڈاؤن لوڈ شعر

محشر میں بھی کسی کے اٹھائیں گے ناز ہم

داغؔ دہلوی

محشر میں بھی کسی کے اٹھائیں گے ناز ہم

داغؔ دہلوی

MORE BYداغؔ دہلوی

    محشر میں بھی کسی کے اٹھائیں گے ناز ہم

    ایسے نیاز مند ہیں اے بے نیاز ہم

    ہوگی فقط شریک دعا ایک بیکسی

    میت پر اپنی آپ پڑھیں گے نماز ہم

    واعظ یہی نہ کہہ دے کہ پیدا ہی کیوں ہوئے

    دنیا میں آئیں اور رہیں پاک باز ہم

    اس میں بھی کوئی بھید ہے تم جانتے نہیں

    کہتے ہیں ایک ایک سے کیوں دل کے راز ہم

    جب سنتے ہیں کہ آپ پہ دو چار مر گئے

    دلواتے ہیں رقیبوں کی اپنے نیاز ہم

    وہ دن گئے کہ داغؔ تھی ہر دم بتوں کی یاد

    پڑھتے ہیں پانچ وقت کی اب تو نماز ہم

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Jashn-e-Rekhta | 8-9-10 December 2023 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate - New Delhi

    GET YOUR PASS
    بولیے