aaj ik aur baras biit gayā us ke baġhair

jis ke hote hue hote the zamāne mere

رد کریں ڈاؤن لوڈ شعر

ہر دم طرف ہے ویسے مزاج کرخت کا

میر تقی میر

ہر دم طرف ہے ویسے مزاج کرخت کا

میر تقی میر

MORE BYمیر تقی میر

    ہر دم طرف ہے ویسے مزاج کرخت کا

    ٹکڑا مرا جگر ہے کہو سنگ سخت کا

    سبزان ان رو کی جہاں جلوہ گاہ تھی

    اب دیکھیے تو واں نہیں سایہ درخت کا

    جوں برگ ہائے لالہ پریشان ہو گیا

    مذکور کیا ہے اب جگر لخت لخت کا

    دلی میں آج بھیک بھی ملتی نہیں انہیں

    تھا کل تلک دماغ جنہیں تاج و تخت کا

    خاک سیہ سے میں جو برابر ہوا ہوں میرؔ

    سایہ پڑا ہے مجھ پہ کسو تیرہ بخت کا

    مأخذ:

    MIRIYAAT - Diwan No- 1, Ghazal No- 0087

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Jashn-e-Rekhta | 8-9-10 December 2023 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate - New Delhi

    GET YOUR PASS
    بولیے