Font by Mehr Nastaliq Web

aaj ik aur baras biit gayā us ke baġhair

jis ke hote hue hote the zamāne mere

رد کریں ڈاؤن لوڈ شعر

کہا یہ میں نے کہ اپنی آنکھوں میں خواب رکھنا

منیر انور

کہا یہ میں نے کہ اپنی آنکھوں میں خواب رکھنا

منیر انور

MORE BYمنیر انور

    کہا یہ میں نے کہ اپنی آنکھوں میں خواب رکھنا

    کہا یہ اس نے کہ آنکھ رکھنا عذاب رکھنا

    یہ میں نے پوچھا تھا لوگ کیوں مر رہے ہیں اتنے

    جواب آیا تم ان کے خوں کا حساب رکھنا

    کہا یہ میں نے زمین پر امن ہو سکے گا

    کہا کہ ہاتھوں میں علم رکھنا کتاب رکھنا

    کہا یہ میں نے کہ زندگی کس طرح کٹے گی

    کہا یہ اس نے کہ چاہتیں بے حساب رکھنا

    کہا یہ میں نے ہوائیں ہیں تند و تیز کتنی

    وہ ہنس کے بولی کہ کشتیاں زیر آب رکھنا

    کہا یہ اس نے کہ دائرے سے نکل کے دیکھیں

    کہا کہ پہلے کوئی سفر انتخاب رکھنا

    کہا یہ اس نے کہ بھیڑ میں ہم بچھڑ نہ جائیں

    کہا کہ جوڑے میں ایک تازہ گلاب رکھنا

    کہا یہ اس نے کہ ہم اگر سچ کا ساتھ دیں تو

    کہا یہ میں نے کہ سہنے کی تاب رکھنا

    مأخذ :
    • کتاب : Word File Mail By Salim Saleem

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Jashn-e-Rekhta | 8-9-10 December 2023 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate - New Delhi

    GET YOUR PASS
    بولیے