نہ جھٹکو زلف سے پانی یہ موتی ٹوٹ جائیں گے

راجیندر کرشن

نہ جھٹکو زلف سے پانی یہ موتی ٹوٹ جائیں گے

راجیندر کرشن

MORE BY راجیندر کرشن

    INTERESTING FACT

    فلم شہنائی ۱۹۶۴

    نہ جھٹکو زلف سے پانی یہ موتی ٹوٹ جائیں گے

    تمہارا کچھ نہ بگڑے گا مگر دل ٹوٹ جائیں گے

    یہ بھیگی رات یہ بھیگا بدن یہ حسن کا عالم

    یہ سب انداز مل کر دو جہاں کو لوٹ جائیں گے

    یہ نازک لب ہیں یا آپس میں دو لپٹی ہوئی کلیاں

    ذرا ان کو الگ کر دو ترنم پھوٹ جائیں گے

    ہماری جان لے لے گا یہ نیچی آنکھ کا جادو

    چلو اچھا ہوا مر کر جہاں سے چھوٹ جائیں گے

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY