aaj ik aur baras biit gayā us ke baġhair

jis ke hote hue hote the zamāne mere

رد کریں ڈاؤن لوڈ شعر

رندان بادہ نوش کی چھاگل اٹھا تو لا

ناطق گلاوٹھی

رندان بادہ نوش کی چھاگل اٹھا تو لا

ناطق گلاوٹھی

MORE BYناطق گلاوٹھی

    رندان بادہ نوش کی چھاگل اٹھا تو لا

    باد بہار دوڑ کے بادل اٹھا تو لا

    آ عمر رفتہ حشر کے دم خم بھی دیکھ لیں

    طوفان زندگی کی وہ ہلچل اٹھا تو لا

    سر سے دیار غم کے سنیچر اتار دے

    منگل ہے جس میں جا کے وہ جنگل اٹھا تو لا

    لالچ بتا کے دور سے واعظ کا رنگ دیکھ

    خالی ہی کیوں نہ ہو کوئی بوتل اٹھا تو لا

    اے زندگی جنوں نہ سہی بے خودی سہی

    تو کچھ بھی اپنی عقل سے پاگل اٹھا تو لا

    آتی ہے یاد صبح مسرت کی بار بار

    خورشید آتے آتے اسے کل اٹھا تو لا

    کشتی ہے گھاٹ پر تو چلے کیوں نہ دور آج

    کل بس چلے چلے نہ چلے چل اٹھا تو لا

    ناطقؔ جنون خدمت احباب کس لیے

    دیکھیں تو کیا ملا ہے تجھے پھل اٹھا تو لا

    مأخذ:

    Deewan-e-Natiq (Pg. ebook-53 page-41)

    • مصنف: ناطق گلاوٹھی
      • اشاعت: 1976
      • ناشر: محمد عبد الحلیم
      • سن اشاعت: 1976

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Jashn-e-Rekhta | 8-9-10 December 2023 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate - New Delhi

    GET YOUR PASS
    بولیے