aaj ik aur baras biit gayā us ke baġhair

jis ke hote hue hote the zamāne mere

رد کریں ڈاؤن لوڈ شعر

یہ دل یہ پاگل دل مرا کیوں بجھ گیا آوارگی

محسن نقوی

یہ دل یہ پاگل دل مرا کیوں بجھ گیا آوارگی

محسن نقوی

MORE BYمحسن نقوی

    دلچسپ معلومات

    فلم ماٹی مانگے خون ۱۹۸۴

    یہ دل یہ پاگل دل مرا کیوں بجھ گیا آوارگی

    اس دشت میں اک شہر تھا وہ کیا ہوا آوارگی

    کل شب مجھے بے شکل کی آواز نے چونکا دیا

    میں نے کہا تو کون ہے اس نے کہا آوارگی

    لوگو بھلا اس شہر میں کیسے جئیں گے ہم جہاں

    ہو جرم تنہا سوچنا لیکن سزا آوارگی

    یہ درد کی تنہائیاں یہ دشت کا ویراں سفر

    ہم لوگ تو اکتا گئے اپنی سنا آوارگی

    اک اجنبی جھونکے نے جب پوچھا مرے غم کا سبب

    صحرا کی بھیگی ریت پر میں نے لکھا آوارگی

    اس سمت وحشی خواہشوں کی زد میں پیمان وفا

    اس سمت لہروں کی دھمک کچا گھڑا آوارگی

    کل رات تنہا چاند کو دیکھا تھا میں نے خواب میں

    محسنؔ مجھے راس آئے گی شاید سدا آوارگی

    ویڈیو
    This video is playing from YouTube

    Videos
    This video is playing from YouTube

    غلام علی

    غلام علی

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Jashn-e-Rekhta | 2-3-4 December 2022 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate, New Delhi

    GET YOUR FREE PASS
    بولیے