Font by Mehr Nastaliq Web

aaj ik aur baras biit gayā us ke baġhair

jis ke hote hue hote the zamāne mere

رد کریں ڈاؤن لوڈ شعر

جوش پر یوں جذبۂ بے اختیار آ ہی گیا

بوم میرٹھی

جوش پر یوں جذبۂ بے اختیار آ ہی گیا

بوم میرٹھی

MORE BYبوم میرٹھی

    جوش پر یوں جذبۂ بے اختیار آ ہی گیا

    دیکھ کر ان کو برہنہ مجھ کو پیار آ ہی گیا

    غیر جب خلوت سے نکلا دوڑ کر میں نے کہا

    دوسرا بھی آپ کا امیدوار آ ہی گیا

    تھا نزاکت سے بہت مجبور پھر بھی بعد مرگ

    سالا اٹھتا بیٹھتا سوئے مزار آ ہی گیا

    اس کا سینہ سے لپٹنا تھا کہ تسکیں ہو گئی

    بے قراری کو مری کچھ تو قرار آ ہی گیا

    انتظاری میں کسی کے رات بھر تڑپا کئے

    جھوٹے وعدہ کا کسی کے اعتبار آ ہی گیا

    ان کا بیمار محبت سنتے ہی اعلان دید

    تھام کر دل گرتا پڑتا بے قرار آ ہی گیا

    خوف بدنامی سے گو اکثر چھپایا جرم کو

    لب پر ان کا نام پھر بھی بار بار آ ہی گیا

    موضوعات

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Jashn-e-Rekhta | 8-9-10 December 2023 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate - New Delhi

    GET YOUR PASS
    بولیے