تجھ سے بچھڑوں تو تری ذات کا حصہ ہو جاؤں

احمد کمال پروازی

تجھ سے بچھڑوں تو تری ذات کا حصہ ہو جاؤں

احمد کمال پروازی

MORE BYاحمد کمال پروازی

    تجھ سے بچھڑوں تو تری ذات کا حصہ ہو جاؤں

    جس سے مرتا ہوں اسی زہر سے اچھا ہو جاؤں

    تم مرے ساتھ ہو یہ سچ تو نہیں ہے لیکن

    میں اگر جھوٹ نہ بولوں تو اکیلا ہو جاؤں

    میں تری قید کو تسلیم تو کرتا ہوں مگر

    یہ مرے بس میں نہیں ہے کہ پرندہ ہو جاؤں

    آدمی بن کے بھٹکنے میں مزا آتا ہے

    میں نے سوچا ہی نہیں تھا کہ فرشتہ ہو جاؤں

    وہ تو اندر کی اداسی نے بچایا ورنہ

    ان کی مرضی تو یہی تھی کہ شگفتہ ہو جاؤں

    RECITATIONS

    نعمان شوق

    نعمان شوق

    نعمان شوق

    تجھ سے بچھڑوں تو تری ذات کا حصہ ہو جاؤں نعمان شوق

    مأخذ :
    • کتاب : Chandi Ka waraq (Pg. 148)
    • Author : Ahmad Kamal Parvazi
    • مطبع : Surkhwab Publication (2009)
    • اشاعت : 2009

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY