aaj ik aur baras biit gayā us ke baġhair

jis ke hote hue hote the zamāne mere

رد کریں ڈاؤن لوڈ شعر

وہ آنکھیں زہر ایسا بو گئی ہیں

جالب نعمانی

وہ آنکھیں زہر ایسا بو گئی ہیں

جالب نعمانی

MORE BYجالب نعمانی

    وہ آنکھیں زہر ایسا بو گئی ہیں

    زمینیں زرد صحرا ہو گئی ہیں

    اندھیرے گر رہے ہیں آسماں سے

    فضا کی وسعتیں بھی سو گئی ہیں

    ہمیشہ ایک جا پاتا ہوں خود کو

    حدیں منزل کی شاید کھو گئی ہیں

    چمک کیا ریت کی ذروں میں ہوگی

    جو سونا تھا وہ موجیں دھو گئی ہیں

    پگھلتے دیکھ کے سورج کی گرمی

    ابھی معصوم کرنیں رو گئی ہیں

    مأخذ:

    Shab Khoon(Shumara Number-067) (Pg. ebook-72 page-69)

      • اشاعت: 1971
      • ناشر: اسرار کریمی پریس، الہ آباد
      • سن اشاعت: 1971

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Jashn-e-Rekhta | 8-9-10 December 2023 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate - New Delhi

    GET YOUR PASS
    بولیے