جام ٹکراؤ! وقت نازک ہے

ساغر صدیقی

جام ٹکراؤ! وقت نازک ہے

ساغر صدیقی

MORE BYساغر صدیقی

    جام ٹکراؤ! وقت نازک ہے

    رنگ چھلکاؤ! وقت نازک ہے

    حسرتوں کی حسین قبروں پر

    پھول برساؤ! وقت نازک ہے

    اک فریب اور زندگی کے لیے

    ہاتھ پھیلاؤ! وقت نازک ہے

    رنگ اڑنے لگا ہے پھولوں کا

    اب تو آ جاؤ! وقت نازک ہے

    تشنگی تشنگی! ارے توبہ

    زلف لہراؤ! وقت نازک ہے

    بزم ساغرؔ ہے گوش بر آواز

    کچھ تو فرماؤ! وقت نازک ہے

    موضوعات

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Jashn-e-Rekhta | 2-3-4 December 2022 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate, New Delhi

    GET YOUR FREE PASS
    بولیے