aaj ik aur baras biit gayā us ke baġhair

jis ke hote hue hote the zamāne mere

رد کریں ڈاؤن لوڈ شعر

یہ جو شہتیر ہے پلکوں پہ اٹھا لو یارو

دشینت کمار

یہ جو شہتیر ہے پلکوں پہ اٹھا لو یارو

دشینت کمار

MORE BYدشینت کمار

    یہ جو شہتیر ہے پلکوں پہ اٹھا لو یارو

    اب کوئی ایسا طریقہ بھی نکالو یارو

    درد دل وقت کو پیغام بھی پہنچائے گا

    اس کبوتر کو ذرا پیار سے پالو یارو

    لوگ ہاتھوں میں لیے بیٹھے ہیں اپنے پنجرے

    آج صیاد کو محفل میں بلا لو یارو

    آج سیون کو ادھیڑو تو ذرا دیکھیں گے

    آج صندوق سے وہ خط تو نکالو یارو

    رہنماؤں کی اداؤں پہ فدا ہے دنیا

    اس بہکتی ہوئی دنیا کو سنبھالو یارو

    کیسے آکاش میں سوراخ نہیں ہو سکتا

    ایک پتھر تو طبیعت سے اچھالو یارو

    لوگ کہتے تھے کہ یہ بات نہیں کہنے کی

    تم نے کہہ دی ہے تو کہنے کی سزا لو یارو

    مأخذ:

    Saye mein dhoop (Pg. 49)

    • مصنف: Dushyant Kumar
      • اشاعت: 2011
      • ناشر: Radha krishna Prakashan.Pvt.Ltd
      • سن اشاعت: 2011

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Jashn-e-Rekhta | 8-9-10 December 2023 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate - New Delhi

    GET YOUR PASS
    بولیے