aaj ik aur baras biit gayā us ke baġhair

jis ke hote hue hote the zamāne mere

رد کریں ڈاؤن لوڈ شعر

ہم بھارت کے رکھوالے ہیں

نازش پرتاپ گڑھی

ہم بھارت کے رکھوالے ہیں

نازش پرتاپ گڑھی

MORE BYنازش پرتاپ گڑھی

    ہم بھارت کے رکھوالے ہیں

    سب اس کے بچے بالے ہیں

    کیسے یہ بہاری کشمیری

    اور کیا ہیں یہ اترپردیشی

    کیسے پنجابی آسامی

    کیسے مدراسی بنگالی

    سب کے سب بھارت والے ہیں

    سب اس کے بچے بالے ہیں

    سب بھارت کے رکھوالے ہیں

    ہو نردھن یا دھنوان کوئی

    ہو دھرم کوئی ایمان کوئی

    یا بتلائے رحمان کوئی

    یا کہتا ہو بھگوان کوئی

    سب اس مٹی کے پالے ہیں

    سب کے سب بھارت والے ہیں

    سب بھارت کے رکھوالے ہیں

    شیدا مسجد کے منظر کا

    یا ہو وہ پجاری مندر کا

    ہر رہنے والا اس گھر کا

    سینک ہے ایک ہی لشکر کا

    سب کے سب اس کے حوالے ہیں

    سب کے سب بھارت والے ہیں

    سب بھارت کے رکھوالے ہیں

    کیا شیخ مغل سید کا چلن

    کیسے ٹھاکر پنڈت ہریجن

    کیا چھوت اچھوت کا پاگل پن

    سب ایک ہیں سب کا ایک وطن

    جو گورے ہیں یا کالے ہیں

    سب کے سب بھارت والے ہیں

    سب بھارت کے رکھوالے ہیں

    کیسا ہلکا کیسا بوجھل

    کویتا ہو کوئی یا ہو غزل

    کیا بل والا اور کیا نربل

    بھارت ماں کا سب پر آنچل

    سب اس میں پلنے والے ہیں

    سب کے سب بھارت والے ہیں

    سب بھارت کے رکھوالے ہیں

    مأخذ:

    اپنی دھرتی اپنی بات (Pg. 60)

    • مصنف: نازش پرتاپ گڑھی
      • ناشر: اترپردیش اردو اکیڈمی، لکھنؤ
      • سن اشاعت: 1985

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Jashn-e-Rekhta | 8-9-10 December 2023 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate - New Delhi

    GET YOUR PASS
    بولیے