آخری خواہش

حماد حسن

آخری خواہش

حماد حسن

MORE BYحماد حسن

    دیکھ کر بیٹے کے لچھن باپ نے اس سے کہا

    تو پڑھائی میں نکما ہے مرے جزو بدن

    آخری خواہش ہے میری جان لے اے نور چشم

    تو کمشنر بن نہیں سکتا نہ بن لیڈر تو بن

    پانی پانی کر گئی بیٹے کو ابا کی یہ بات

    تو جھکا جب ساس کے آگے تو پھر نوکر بھی بن

    بھول کر سب قدریں اپنی ہم تو ہندو ہو گئے

    جانے ہم کو اب کہاں لے جائے گا دیوانہ پن

    گر یہی مہنگائی کا عالم رہا تو ایک دن

    بیچنا پڑ جائے گا ہم کو بھی اپنا پیرہن

    مأخذ :

    موضوعات

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Jashn-e-Rekhta | 2-3-4 December 2022 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate, New Delhi

    GET YOUR FREE PASS
    بولیے