aaj ik aur baras biit gayā us ke baġhair

jis ke hote hue hote the zamāne mere

رد کریں ڈاؤن لوڈ شعر

بارش ہوگی

گلزار

بارش ہوگی

گلزار

MORE BYگلزار

    بارش بارش بارش ہوگی

    گندے پانی میں مت جانا

    خارش ہوگی

    پھوڑے پھنسیاں پھوٹیں گے تو کھجلاؤ گے

    روتے دھوتے ٹیں ٹیں کرتے گھر آؤ گے

    اوپر سے پھر کڑوے تیل کی مالش ہوگی

    بارش بارش بارش ہوگی

    بارش آتی ہے تو نالے بھر دیتی ہے

    کھیلنے کے میدان میں کیچڑ کر دیتی ہے

    اس بار کچہری میں اس بات کی نالش ہوگی

    بارش بارش بارش ہوگی

    پیڑوں کو نوکیلی بوندیں چبھتی ہیں کیا

    تیز ہوا سے ان کی ٹہنیاں دکھتی ہیں کیا

    پیڑوں کو بھی تو چھتری کی خواہش ہوگی

    بارش بارش ہوگی

    مأخذ:

    تسطیر (Pg. 515)

      • ناشر: بک کارنر، پاکستان
      • سن اشاعت: 2017

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Jashn-e-Rekhta | 8-9-10 December 2023 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate - New Delhi

    GET YOUR PASS
    بولیے