aaj ik aur baras biit gayā us ke baġhair

jis ke hote hue hote the zamāne mere

رد کریں ڈاؤن لوڈ شعر

اناؤنسر

مختار صدیقی

اناؤنسر

مختار صدیقی

MORE BYمختار صدیقی

    سرخ بتی نے اشارے سے کہا ہے بولو

    کھوج نظروں کا مٹا بات کے بندھن ٹوٹے

    میرے الفاظ کو لہروں کا کوئی پیمانہ

    چھین لے جائے گا دوری کے بہانے جھوٹے

    منہ سے جو نکلے اسی بات سے ناطہ چھوٹے

    دل میں باقی رہے موہوم سا احساس زیاں

    میں یہ سوچوں کہ ہر اک دشت بھی آبادی بھی

    میرے الفاظ کی تشہیر کا دیکھے گی سماں

    اور بے نام و نشاں دیکھی نہ بھالی لہریں

    ایک عالم مری باتوں کا ڈھنڈورا پیٹیں

    مأخذ:

    Muntakhab Shahkar Nazmon Ka Album) (Pg. 91)

    • مصنف: Munavvar Jameel
      • اشاعت: 2000
      • ناشر: Haji Haneef Printer Lahore
      • سن اشاعت: 2000

    موضوعات

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Jashn-e-Rekhta | 8-9-10 December 2023 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate - New Delhi

    GET YOUR PASS
    بولیے