Nasir Shahzad's Photo'

ناصر شہزاد

1937 - 2007 | اوکاڑہ, پاکستان

تخلص : 'ناصر شہزاد'

اصلی نام : ناصر شہزاد

پیدائش : 21 Dec 1937, اوکاڑہ, پاکستان

وفات : 23 Dec 2007

اخروٹ کھائیں تاپیں انگیٹھی پہ آگ آ

رستے تمام گاؤں کے کہرے سے اٹ گئے

نام سید ناصر شہزاد۔۲۱؍دسمبر ۱۹۳۷ء کو شیخو شریف ،ضلع اوکاڑہ میں پیدا ہوئے ان کا وطن ساہیوال ہے۔ ابتدائی تعلیم گاؤں میں حاصل کرنے کے بعد وہ بہ سلسلہ تعلیم ساہیوال منتقل ہوگئے۔ اپنی تعلیمی منازل وہیں کے اسکول اور کالج سے طے کیے۔ ناصر شہزاد کی شاعری نسیم انور، شبنم دل اور پروفیسر صلاح الدین جیسے قابل اساتذہ کے علاوہ مجید امجد جیسے معتبر لوگوں کی صحبت میں پروان چڑھی۔ ان کی غزلوں میں ہندی تغزل کا امتزاج ہے۔ انھوں نے غزل کے اشعار کو گیت کے رنگ وآہنگ میں پیش کیا ہے۔ ان کی غزل ہندستانی تہذیب کی پیدا وار معلوم ہوتی ہے۔ان کی تصانیف کے نام یہ ہیں:’چاندنی کی پیتاں‘(بیت وغزل) ’بن باس‘(گیت، نظمیں، غزل) ۔ وہ ٹریفک کے حادثے میں جاں بحق ہوگئے۔ انھیں ۲۳؍ دسمبر ۲۰۰۷ء کو شیخو شریف میں سپرد خاک کردیا گیا۔ بحوالۂ:پیمانۂ غزل(جلد دوم)،محمد شمس الحق،صفحہ:326

Added to your favorites

Removed from your favorites