Swappnil Tiwari's Photo'

سوپنل تیواری

1984 | ممبئی, انڈیا

نئی نسل کے نمایندہ شاعر

نئی نسل کے نمایندہ شاعر

سوپنل تیواری

غزل 34

نظم 6

اشعار 12

یہ زندگی جو پکارے تو شک سا ہوتا ہے

کہیں ابھی تو مجھے خود کشی نہیں کرنی

سارا غصہ اب بس اس کام آتا ہے

ہم اس سے سگریٹ سلگایا کرتے ہیں

بڑے ہی غصے میں یہ کہہ کے اس نے وصل کیا

مجھے تو تم سے کوئی بات ہی نہیں کرنی

اور کم یاد آؤگی اگلے برس تم

اب کے کم یاد آئی ہو پچھلے برس سے

اگر دوبارہ بنی یہ دنیا

تو پہلے تیری گلی بنے گی

  • شیئر کیجیے

تصویری شاعری 1

 

ویڈیو 9

This video is playing from YouTube

ویڈیو کا زمرہ
کلام شاعر بہ زبان شاعر
ایسی اچھی صورت نکلی پانی کی

سوپنل تیواری

دھوپ کے بھیتر چھپ کر نکلی

سوپنل تیواری

سماعتوں میں بہت دور کی صدا لے کر

سوپنل تیواری

ملی ہے راحت ہمیں سفر سے

سوپنل تیواری

ملی ہے راحت ہمیں سفر سے

سوپنل تیواری

منہ اندھیرے تیری یادوں سے نکلنا ہے مجھے

سوپنل تیواری

ندی کی لے پہ خود کو گا رہا ہوں

سوپنل تیواری

کرن اک معجزہ سا کر گئی ہے

سوپنل تیواری

کسی نے بھی نہ میری ٹھیک ترجمانی کی

سوپنل تیواری

متعلقہ بلاگ

 

"ممبئی" کے مزید شعرا

Recitation

aah ko chahiye ek umr asar hote tak SHAMSUR RAHMAN FARUQI

Jashn-e-Rekhta | 2-3-4 December 2022 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate, New Delhi

GET YOUR FREE PASS
بولیے