اب بتاؤ جائے گی زندگی کہاں یارو

حمایت علی شاعر

اب بتاؤ جائے گی زندگی کہاں یارو

حمایت علی شاعر

MORE BYحمایت علی شاعر

    اب بتاؤ جائے گی زندگی کہاں یارو

    پھر ہیں برق کی نظریں سوئے آشیاں یارو

    اب نہ کوئی منزل ہے اور نہ رہ گزر کوئی

    جانے قافلہ بھٹکے اب کہاں کہاں یارو

    پھول ہیں کہ لاشیں ہیں باغ ہے کہ مقتل ہے

    شاخ شاخ ہوتا ہے دار کا گماں یارو

    موت سے گزر کر یہ کیسی زندگی پائی

    فکر پا بہ جولاں ہے گنگ ہے زباں یارو

    تربتوں کی شمعیں ہیں اور گہری خاموشی

    جا رہے تھے کس جانب آ گئے کہاں یارو

    راہزن کے بارے میں اور کیا کہوں کھل کر

    میر کارواں یارو میر کارواں یارو

    صرف زندہ رہنے کو زندگی نہیں کہتے

    کچھ غم محبت ہو کچھ غم جہاں یارو

    وقت کا تقاضا تو اور بھی ہے کچھ لیکن

    کچھ نہیں تو ہو جاؤ میرے ہم زباں یارو

    ایک میں ہوں جس کو تم مانتے نہیں شاعرؔ

    اور ایک میں ہی ہوں تم میں نکتہ داں یارو

    ویڈیو
    This video is playing from YouTube

    Videos
    This video is playing from YouTube

    حمایت علی شاعر

    حمایت علی شاعر

    RECITATIONS

    نعمان شوق

    نعمان شوق

    نعمان شوق

    اب بتاؤ جائے گی زندگی کہاں یارو نعمان شوق

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY