aaj ik aur baras biit gayā us ke baġhair

jis ke hote hue hote the zamāne mere

رد کریں ڈاؤن لوڈ شعر

اب خانماں خراب کی منزل یہاں نہیں

باقر مہدی

اب خانماں خراب کی منزل یہاں نہیں

باقر مہدی

MORE BYباقر مہدی

    اب خانماں خراب کی منزل یہاں نہیں

    کہنے کو آشیاں ہے مگر آشیاں نہیں

    عشق ستم نواز کی دنیا بدل گئی

    حسن وفا شناس بھی کچھ بدگماں نہیں

    میرے صنم کدے میں کئی اور بت بھی ہیں

    اک میری زندگی کے تمہیں راز داں نہیں

    تم سے بچھڑ کے مجھ کو سہارا تو مل گیا

    یہ اور بات ہے کہ میں کچھ شادماں نہیں

    اپنے حسین خواب کی تعبیر خود کرے

    اتنا تو معتبر یہ دل ناتواں نہیں

    زلف دراز قصۂ غم میں الجھ نہ جائے

    اندیشہ ہائے عشق کہاں ہیں کہاں نہیں

    ہر ہر قدم پہ کتنے ستارے بکھر گئے

    لیکن رہ حیات ابھی کہکشاں نہیں

    سیلاب زندگی کے سہارے بڑھے چلو

    ساحل پہ رہنے والوں کا نام و نشاں نہیں

    RECITATIONS

    نعمان شوق

    نعمان شوق,

    نعمان شوق

    اب خانماں خراب کی منزل یہاں نہیں نعمان شوق

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Jashn-e-Rekhta | 8-9-10 December 2023 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate - New Delhi

    GET YOUR PASS
    بولیے