Font by Mehr Nastaliq Web

aaj ik aur baras biit gayā us ke baġhair

jis ke hote hue hote the zamāne mere

رد کریں ڈاؤن لوڈ شعر

بزعم خود کہیں خود سے ورا نہ ہو جاؤں

پرویز ساحر

بزعم خود کہیں خود سے ورا نہ ہو جاؤں

پرویز ساحر

MORE BYپرویز ساحر

    بزعم خود کہیں خود سے ورا نہ ہو جاؤں

    خدا نخواستہ میں بھی خدا نہ ہو جاؤں

    بس ایک دھیان کی میں انگلی تھام رکھی ہے

    کہ بھیڑ میں کہیں خود سے جدا نہ ہو جاؤں

    یہ سوچتا ہوں کسی دل میں گھر کروں میں بھی

    اور اس سے پہلے یہاں بے ٹھکانہ ہو جاؤں

    یہ جی میں آتا ہے میرے کہ رفتگاں کی طرح

    میں آج ملک عدم کو روانہ ہو جاؤں

    سب اہل دہر مجھے ڈھونڈتے نہ رہ جائیں

    میں اپنی ذات ہی میں لاپتا نہ ہو جاؤں

    کوئی تو ہو جو مجھے زندگی ہی میں پائے

    کسی کے ہاتھ میں آیا خزانہ ہو جاؤں

    جو ہو سکے تو مرے جیتے جی ہی قدر کرو

    مبادا میں کوئی گزرا زمانہ ہو جاؤں

    بس ایک تجربہ میرے لئے بہت ہے دلا

    اک اور عشق میں پھر مبتلا نہ ہو جاؤں

    میں اک چراغ سر رہ گزار ہوں ساحرؔ

    ہوا کے ساتھ بالآخر ہوا نہ ہو جاؤں

    ગુજરાતી ભાષા-સાહિત્યનો મંચ : રેખ્તા ગુજરાતી

    ગુજરાતી ભાષા-સાહિત્યનો મંચ : રેખ્તા ગુજરાતી

    મધ્યકાલથી લઈ સાંપ્રત સમય સુધીની ચૂંટેલી કવિતાનો ખજાનો હવે છે માત્ર એક ક્લિક પર. સાથે સાથે સાહિત્યિક વીડિયો અને શબ્દકોશની સગવડ પણ છે. સંતસાહિત્ય, ડાયસ્પોરા સાહિત્ય, પ્રતિબદ્ધ સાહિત્ય અને ગુજરાતના અનેક ઐતિહાસિક પુસ્તકાલયોના દુર્લભ પુસ્તકો પણ તમે રેખ્તા ગુજરાતી પર વાંચી શકશો

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Jashn-e-Rekhta | 8-9-10 December 2023 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate - New Delhi

    GET YOUR PASS
    بولیے