برباد تمنا پہ عتاب اور زیادہ

اسرار الحق مجاز

برباد تمنا پہ عتاب اور زیادہ

اسرار الحق مجاز

MORE BYاسرار الحق مجاز

    برباد تمنا پہ عتاب اور زیادہ

    ہاں میری محبت کا جواب اور زیادہ

    روئیں نہ ابھی اہل نظر حال پہ میرے

    ہونا ہے ابھی مجھ کو خراب اور زیادہ

    آوارہ و مجنوں ہی پہ موقوف نہیں کچھ

    ملنے ہیں ابھی مجھ کو خطاب اور زیادہ

    اٹھیں گے ابھی اور بھی طوفاں مرے دل سے

    دیکھوں گا ابھی عشق کے خواب اور زیادہ

    ٹپکے گا لہو اور مرے دیدۂ تر سے

    دھڑکے گا دل خانۂ خراب اور زیادہ

    ہوگی مری باتوں سے انہیں اور بھی حیرت

    آئے گا انہیں مجھ سے حجاب اور زیادہ

    اسے مطرب بیباک کوئی اور بھی نغمہ

    اے ساقیٔ فیاض شراب اور زیادہ

    مآخذ
    • کتاب : Kulliyaat-e-Majaz (Pg. 204)

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY