بھلا دیا بھی اگر جائے سرسری کیا جائے

حماد نیازی

بھلا دیا بھی اگر جائے سرسری کیا جائے

حماد نیازی

MORE BY حماد نیازی

    بھلا دیا بھی اگر جائے سرسری کیا جائے

    مطالعہ مری وحشت کا لازمی کیا جائے

    ہم ایسے لوگ جو آئندہ و گزشتہ ہیں

    ہمارے عہد کو موجود سے تہی کیا جائے

    خبر ملی ہے کہ اس خوش خبر کی آمد ہے

    سو اہتمام سخن آج ملتوی کیا جائے

    ہمیں اب اپنے نئے راستے بنانے ہیں

    جو کام کل ہمیں کرنا ہے وہ ابھی کیا جائے

    نہیں بعید یہ احکام تازہ جاری ہوں

    کہ گنبدوں سے پرندوں کو اجنبی کیا جائے

    بس ایک لمحہ ترے وصل کا میسر ہو

    اور اس وصال کے لمحے کو دائمی کیا جائے

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY