چہرۂ صبح نظر آیا رخ شام کے بعد

فنا نظامی کانپوری

چہرۂ صبح نظر آیا رخ شام کے بعد

فنا نظامی کانپوری

MORE BYفنا نظامی کانپوری

    چہرۂ صبح نظر آیا رخ شام کے بعد

    سب کو پہچان لیا گردش ایام کے بعد

    مل گئی راہ یقیں منزل اوہام کے بعد

    جلوے ہی جلوے نظر آئے در و بام کے بعد

    چاہیئے اہل محبت کو کہ دیوانہ بنیں

    کوئی الزام نہ آئے گا اس الزام کے بعد

    امتحان طلب خام لیا ساقی نے

    جام لبریز دیا درد تہ جام کے بعد

    ہائے کیا چیز ہے یہ لطف شکستہ پائی

    حوصلے اور بڑھے کوشش ناکام کے بعد

    زندگی نام ہے اک جہد مسلسل کا فناؔ

    راہرو اور بھی تھک جاتا ہے آرام کے بعد

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY