دل بجھنے لگا آتش رخسار کے ہوتے

زہرا نگاہ

دل بجھنے لگا آتش رخسار کے ہوتے

زہرا نگاہ

MORE BYزہرا نگاہ

    دل بجھنے لگا آتش رخسار کے ہوتے

    تنہا نظر آتے ہیں غم یار کے ہوتے

    کیوں بدلے ہوئے ہیں نگۂ ناز کے انداز

    اپنوں پہ بھی اٹھ جاتی ہے اغیار کے ہوتے

    ویراں ہے نظر میری ترے رخ کے مقابل

    آوارہ ہیں غم کوچۂ دل دار کے ہوتے

    اک یہ بھی ادائے دل آشفتہ سراں تھی

    بیٹھے نہ کہیں سایۂ دیوار کے ہوتے

    جینا ہے تو جی لیں گے بہر طور دوانے

    کس بات کا غم ہے رسن و دار کے ہوتے

    ویڈیو
    This video is playing from YouTube

    Videos
    This video is playing from YouTube

    زہرا نگاہ

    زہرا نگاہ

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY