ایک بھی قطرہ نہ چھوڑا کیجیے

ولاس پنڈت مسافر

ایک بھی قطرہ نہ چھوڑا کیجیے

ولاس پنڈت مسافر

MORE BYولاس پنڈت مسافر

    ایک بھی قطرہ نہ چھوڑا کیجیے

    دل مرا جب بھی نچوڑا کیجیے

    آپ ہی کے نام سے پہچان ہو

    نام میرا ساتھ جوڑا کیجیے

    سیدھے سیدھے چل کے کیا حاصل ہوا

    زندگی مڑتی ہے موڑا کیجیے

    صرف دنیا پر ہی ساری تہمتیں

    خود کو بھی آخر جھنجھوڑا کیجیے

    لینے والے تو سبھی کچھ لے گئے

    آپ بھی احسان تھوڑا کیجیے

    آپ کو یہ حق محبت میں دیا

    دل ہے میرا خوب توڑا کیجیے

    میں مسافرؔ ہوں مجھے چلنا ہی ہے

    با ادب چھالے نہ پھوڑا کیجیے

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY