غیروں پہ کھل نہ جائے کہیں راز دیکھنا

مومن خاں مومن

غیروں پہ کھل نہ جائے کہیں راز دیکھنا

مومن خاں مومن

MORE BY مومن خاں مومن

    غیروں پہ کھل نہ جائے کہیں راز دیکھنا

    میری طرف بھی غمزۂ غماز دیکھنا

    اڑتے ہی رنگ رخ مرا نظروں سے تھا نہاں

    اس مرغ پر شکستہ کی پرواز دیکھنا

    دشنام یار طبع حزیں پر گراں نہیں

    اے ہم نفس نزاکت آواز دیکھنا

    دیکھ اپنا حال زار منجم ہوا رقیب

    تھا سازگار طالع ناساز دیکھنا

    بد کام کا مآل برا ہے جزا کے دن

    حال سپہر تفرقہ انداز دیکھنا

    مت رکھیو گرد تارک عشاق پر قدم

    پامال ہو نہ جائے سرافراز دیکھنا

    میری نگاہ خیرہ دکھاتے ہیں غیر کو

    بے طاقتی پہ سرزنش ناز دیکھنا

    ترک صنم بھی کم نہیں سوز جحیم سے

    مومنؔ غم مآل کا آغاز دیکھنا

    RECITATIONS

    فصیح اکمل

    فصیح اکمل

    فصیح اکمل

    غیروں پہ کھل نہ جائے کہیں راز دیکھنا فصیح اکمل

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY