اس رہ گزر میں اپنا قدم بھی جدا ملا

زہرا نگاہ

اس رہ گزر میں اپنا قدم بھی جدا ملا

زہرا نگاہ

MORE BYزہرا نگاہ

    اس رہ گزر میں اپنا قدم بھی جدا ملا

    اتنی صعوبتوں کا ہمیں یہ صلہ ملا

    اک وسعت خیال کہ لفظوں میں گھر گئی

    لہجہ کبھی جو ہم کو کرم آشنا ملا

    تاروں کو گردشیں ملیں ذروں کو تابشیں

    اے رہ نورد راہ جنوں تجھ کو کیا ملا

    ہم سے بڑھی مسافت دشت وفا کہ ہم

    خود ہی بھٹک گئے جو کبھی راستہ ملا

    مأخذ :
    • کتاب : Sham ka Pahla Tara (Pg. 35)
    • Author : ZEHRA NIGAAH
    • اشاعت : 1980

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY