اتنا تو زندگی میں کسی کے خلل پڑے

کیفی اعظمی

اتنا تو زندگی میں کسی کے خلل پڑے

کیفی اعظمی

MORE BY کیفی اعظمی

    INTERESTING FACT

    کیفی اعظمی کی پہلی غزل جو 11 سال کی عمر میں لکھی گئی

    اتنا تو زندگی میں کسی کے خلل پڑے

    ہنسنے سے ہو سکون نہ رونے سے کل پڑے

    جس طرح ہنس رہا ہوں میں پی پی کے گرم اشک

    یوں دوسرا ہنسے تو کلیجہ نکل پڑے

    اک تم کہ تم کو فکر نشیب و فراز ہے

    اک ہم کہ چل پڑے تو بہرحال چل پڑے

    ساقی سبھی کو ہے غم تشنہ لبی مگر

    مے ہے اسی کی نام پہ جس کے ابل پڑے

    مدت کے بعد اس نے جو کی لطف کی نگاہ

    جی خوش تو ہو گیا مگر آنسو نکل پڑے

    ویڈیو
    This video is playing from YouTube

    Videos
    This video is playing from YouTube

    منوورعلی خان

    منوورعلی خان

    بیگم اختر

    بیگم اختر

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY