کسی کی یاد میں آنکھوں کو لال کیا کرنا

حسن عباس رضا

کسی کی یاد میں آنکھوں کو لال کیا کرنا

حسن عباس رضا

MORE BYحسن عباس رضا

    کسی کی یاد میں آنکھوں کو لال کیا کرنا

    جسے بچھڑنا تھا اس کا ملال کیا کرنا

    ہمیں تو اس کی جدائی عزیز رکھنی ہے

    یہ جاہ و حشمت و مال و منال کیا کرنا

    محبتیں تو فقط انتہائیں مانگتی ہیں

    محبتوں میں بھلا اعتدال کیا کرنا

    یہ کار عشق تو بچوں کا کھیل ٹھہرا ہے

    سو کار عشق میں کوئی کمال کیا کرنا

    وہ رابطے جو کیے خود ہی کالعدم ہم نے

    نئے سرے سے پھر ان کو بحال کیا کرنا

    مأخذ :
    • کتاب : Need Musafir (Pg. 67)

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY