کتابیں جب کوئی پڑھتا نہیں تھا

اظہر عنایتی

کتابیں جب کوئی پڑھتا نہیں تھا

اظہر عنایتی

MORE BYاظہر عنایتی

    کتابیں جب کوئی پڑھتا نہیں تھا

    فضا میں شور بھی اتنا نہیں تھا

    عجب سنجیدگی تھی شہر بھر میں

    کہ پاگل بھی کوئی ہنستا نہیں تھا

    بڑی معصوم سی اپنائیت تھی

    وہ مجھ سے روز جب ملتا نہیں تھا

    جوانوں میں تصادم کیسے رکتا

    قبیلے میں کوئی بوڑھا نہیں تھا

    پرانے عہد میں بھی دشمنی تھی

    مگر ماحول زہریلا نہیں تھا

    سبھی کچھ تھا غزل میں اس کی اظہرؔ

    بس اک لہجہ مرے جیسا نہیں تھا

    ویڈیو
    This video is playing from YouTube

    Videos
    This video is playing from YouTube

    اظہر عنایتی

    اظہر عنایتی

    RECITATIONS

    اظہر عنایتی

    اظہر عنایتی,

    اظہر عنایتی

    کتابیں جب کوئی پڑھتا نہیں تھا اظہر عنایتی

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Jashn-e-Rekhta | 2-3-4 December 2022 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate, New Delhi

    GET YOUR FREE PASS
    بولیے