کوئی قریب نہ آئے شکستہ پا ہوں میں

محبوب خزاں

کوئی قریب نہ آئے شکستہ پا ہوں میں

محبوب خزاں

MORE BYمحبوب خزاں

    کوئی قریب نہ آئے شکستہ پا ہوں میں

    کرم تو ہے مگر انجام دیکھتا ہوں میں

    مری نگاہ میں کچھ اور ڈھونڈنے والے

    تری نگاہ میں کچھ اور ڈھونڈتا ہوں میں

    زمانہ دیر فراموش تو نہیں اتنا

    یہ ٹھیک ہے کہ بہت دیر آشنا ہوں میں

    غلط نہیں وہ جو شکوے اب آپ کو ہوں گے

    بدل گیا ہے زمانہ بدل گیا ہوں میں

    مجھے ستاؤ نہیں زندگی نگاہ میں ہے

    فریب کھاؤ نہیں تم کو جانتا ہوں میں

    مرا غرور محبت کہ میں نہیں سمجھا

    تری نظر نے کہا تھا کہ دل ربا ہوں میں

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY
    بولیے