نہ ہو گر دھیان میں چہرہ کسی کا

رحمان خاور

نہ ہو گر دھیان میں چہرہ کسی کا

رحمان خاور

MORE BYرحمان خاور

    نہ ہو گر دھیان میں چہرہ کسی کا

    بہت مشکل سفر ہے زندگی کا

    گلی کوچے بہت روشن ہیں لیکن

    گھروں میں مسئلہ ہے روشنی کا

    چنوں پلکوں سے کب تک سنگریزے

    خداوندا کوئی آنسو خوشی کا

    زمیں صدیوں پرانی ہو چکی ہے

    سہے گی بوجھ کب تک آدمی کا

    نہ جانے اور کتنا فاصلہ ہے

    ہماری زندگی سے زندگی کا

    کوئی خود سے مجھے کمتر سمجھ لے

    یہ مطلب بھی نہیں ہے عاجزی کا

    طلب نے چھین لی بینائی خاور

    کروں کیا راہ کی میں روشنی کا

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY