نہ تم میرے نہ دل میرا نہ جان ناتواں میری

فیاض ہاشمی

نہ تم میرے نہ دل میرا نہ جان ناتواں میری

فیاض ہاشمی

MORE BYفیاض ہاشمی

    نہ تم میرے نہ دل میرا نہ جان ناتواں میری

    تصور میں بھی آ سکتیں نہیں مجبوریاں میری

    نہ تم آئے نہ چین آیا نہ موت آئی شب وعدہ

    دل مضطر تھا میں تھا اور تھیں بے تابیاں میری

    عبث نادانیوں پر آپ اپنی ناز کرتے ہیں

    ابھی دیکھی کہاں ہیں آپ نے نادانیاں میری

    یہ منزل یہ حسیں منزل جوانی نام ہے جس کا

    یہاں سے اور آگے بڑھنا یہ عمر رواں میری

    مأخذ :
    • کتاب : Junoon (Pg. 63)
    • Author : Naseem Muqri
    • مطبع : Naseem Muqri (1990)
    • اشاعت : 1990

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY