نہیں یہ فکر کوئی رہبر کامل نہیں ملتا

اسرار الحق مجاز

نہیں یہ فکر کوئی رہبر کامل نہیں ملتا

اسرار الحق مجاز

MORE BYاسرار الحق مجاز

    نہیں یہ فکر کوئی رہبر کامل نہیں ملتا

    کوئی دنیا میں مانوس مزاج دل نہیں ملتا

    کبھی ساحل پہ رہ کر شوق طوفانوں سے ٹکرائیں

    کبھی طوفاں میں رہ کر فکر ہے ساحل نہیں ملتا

    یہ آنا کوئی آنا ہے کہ بس رسماً چلے آئے

    یہ ملنا خاک ملنا ہے کہ دل سے دل نہیں ملتا

    شکستہ پا کو مژدہ خستگان راہ کو مژدہ

    کہ رہبر کو سراغ جادۂ منزل نہیں ملتا

    وہاں کتنوں کو تخت و تاج کا ارماں ہے کیا کہیے

    جہاں سائل کو اکثر کاسۂ سائل نہیں ملتا

    یہ قتل عام اور بے اذن قتل عام کیا کہئے

    یہ بسمل کیسے بسمل ہیں جنہیں قاتل نہیں ملتا

    RECITATIONS

    خالد مبشر

    خالد مبشر

    خالد مبشر

    نہیں یہ فکر کوئی رہبر کامل نہیں ملتا خالد مبشر

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY