رو رو کے بیاں کرتے پھرو رنج و الم خوب

اجمل صدیقی

رو رو کے بیاں کرتے پھرو رنج و الم خوب

اجمل صدیقی

MORE BYاجمل صدیقی

    رو رو کے بیاں کرتے پھرو رنج و الم خوب

    حاصل نہیں کچھ بھی جو نہ ہو رنگ قلم خوب

    بازار میں اک چیز نہیں کام کی میرے

    یہ شہر مری جیب کا رکھتا ہے بھرم خوب

    منزل تو کسی خاص کو ہی ملتی ہے، ورنہ

    دیکھے تو سبھی نے ہیں مرے نقش قدم خوب

    یہ ٹھیک ہے رشتے میں بندھا رہتا ہے اب دل

    اس کعبے میں ہوتا تھا کبھی جشن صنم خوب

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY