اجڑے ہوئے لوگوں سے گریزاں نہ ہوا کر

محسن نقوی

اجڑے ہوئے لوگوں سے گریزاں نہ ہوا کر

محسن نقوی

MORE BYمحسن نقوی

    اجڑے ہوئے لوگوں سے گریزاں نہ ہوا کر

    حالات کی قبروں کے یہ کتبے بھی پڑھا کر

    کیا جانئے کیوں تیز ہوا سوچ میں گم ہے

    خوابیدہ پرندوں کو درختوں سے اڑا کر

    اس شخص کے تم سے بھی مراسم ہیں تو ہوں گے

    وہ جھوٹ نہ بولے گا مرے سامنے آ کر

    ہر وقت کا ہنسنا تجھے برباد نہ کر دے

    تنہائی کے لمحوں میں کبھی رو بھی لیا کر

    وہ آج بھی صدیوں کی مسافت پہ کھڑا ہے

    ڈھونڈا تھا جسے وقت کی دیوار گرا کر

    اے دل تجھے دشمن کی بھی پہچان کہاں ہے

    تو حلقۂ یاراں میں بھی محتاط رہا کر

    اس شب کے مقدر میں سحر ہی نہیں محسنؔ

    دیکھا ہے کئی بار چراغوں کو بجھا کر

    ویڈیو
    This video is playing from YouTube

    Videos
    This video is playing from YouTube

    عادل قریشی

    عادل قریشی

    موضوعات :

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY