وہ ادائے دلبری ہو کہ نوائے عاشقانہ

جگر مراد آبادی

وہ ادائے دلبری ہو کہ نوائے عاشقانہ

جگر مراد آبادی

MORE BY جگر مراد آبادی

    وہ ادائے دلبری ہو کہ نوائے عاشقانہ

    جو دلوں کو فتح کر لے وہی فاتح زمانہ

    یہ ترا جمال کامل یہ شباب کا زمانہ

    دل دشمناں سلامت دل دوستاں نشانہ

    کبھی حسن کی طبیعت نہ بدل سکا زمانہ

    وہی ناز بے نیازی وہی شان خسروانہ

    میں ہوں اس مقام پر اب کہ فراق و وصل کیسے

    مرا عشق بھی کہانی ترا حسن بھی فسانہ

    مری زندگی تو گزری ترے ہجر کے سہارے

    مری موت کو بھی پیارے کوئی چاہیئے بہانہ

    ترے عشق کی کرامت یہ اگر نہیں تو کیا ہے

    کبھی بے ادب نہ گزرا مرے پاس سے زمانہ

    تری دوری و حضوری کا یہ ہے عجیب عالم

    ابھی زندگی حقیقت ابھی زندگی فسانہ

    مرے ہم صفیر بلبل مرا تیرا ساتھ ہی کیا

    میں ضمیر دشت و دریا تو اسیر آشیانہ

    میں وہ صاف ہی نہ کہہ دوں جو ہے فرق مجھ میں تجھ میں

    ترا درد درد تنہا مرا غم غم زمانہ

    ترے دل کے ٹوٹنے پر ہے کسی کو ناز کیا کیا

    تجھے اے جگرؔ مبارک یہ شکست فاتحانہ

    ویڈیو
    This video is playing from YouTube

    Videos
    This video is playing from YouTube

    بیگم اختر

    بیگم اختر

    RECITATIONS

    نعمان شوق

    نعمان شوق

    نعمان شوق

    وہ ادائے دلبری ہو کہ نوائے عاشقانہ نعمان شوق

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY