aaj ik aur baras biit gayā us ke baġhair

jis ke hote hue hote the zamāne mere

رد کریں ڈاؤن لوڈ شعر

وہ میرے بالوں میں یوں انگلیاں پھراتا تھا

وسیم بریلوی

وہ میرے بالوں میں یوں انگلیاں پھراتا تھا

وسیم بریلوی

MORE BYوسیم بریلوی

    وہ میرے بالوں میں یوں انگلیاں پھراتا تھا

    کہ آسماں کے فرشتوں کو پیار آتا تھا

    اسے گلاب کی پتی نے قتل کر ڈالا

    وہ سب کی راہوں میں کانٹے بہت بچھاتا تھا

    تمہارے ساتھ نگاہوں کا کاروبار گیا

    تمہارے بعد نگاہوں میں کون آتا تھا

    سفر کے ساتھ سفر کے نئے مسائل تھے

    گھروں کا ذکر تو رستے میں چھوٹ جاتا تھا

    مأخذ:

    Mera Kiya (Pg. 140)

    • مصنف: Waseem Barelvi
      • اشاعت: 2007
      • ناشر: Maktaba Jamia Ltd.
      • سن اشاعت: 2007

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Jashn-e-Rekhta | 8-9-10 December 2023 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate - New Delhi

    GET YOUR PASS
    بولیے