یہ سوچا ہی نہیں تھا تشنگی میں

عاصمہ طاہر

یہ سوچا ہی نہیں تھا تشنگی میں

عاصمہ طاہر

MORE BYعاصمہ طاہر

    یہ سوچا ہی نہیں تھا تشنگی میں

    کہاں رکھوں گی لب میں بے بسی میں

    تمہاری سمت آنے کی طلب میں

    میں رکتی ہی نہیں ہوں بے خودی میں

    دل خوش فہم تجھ سے کتنے ہوں گے

    نثار اس کی تمنا کی گلی میں

    نہیں وہ اتنا بھی پاگل نہیں تھا

    جو مر جاتا مری وابستگی میں

    مجھے اب عاصمہؔ چلنا پڑے گا

    خود اپنے آپ ہی کی رہبری میں

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY