آئینے سے پردا کر کے دیکھا جائے

بھارت بھوشن پنت

آئینے سے پردا کر کے دیکھا جائے

بھارت بھوشن پنت

MORE BY بھارت بھوشن پنت

    آئینے سے پردا کر کے دیکھا جائے

    خود کو اتنا تنہا کر کے دیکھا جائے

    ہم بھی تو دیکھیں ہم کتنے سچے ہیں

    خود سے بھی اک وعدہ کر کے دیکھا جائے

    دیواروں کو چھوٹا کرنا مشکل ہے

    اپنے قد کو اونچا کر کے دیکھا جائے

    راتوں میں اک سورج بھی دکھ جائے گا

    ہر منظر کو الٹا کر کے دیکھا جائے

    دریا نے بھی ترسایا ہے پیاسوں کو

    دریا کو بھی پیاسا کر کے دیکھا جائے

    اب آنکھوں سے اور نہ دیکھا جائے گا

    اب آنکھوں کو اندھا کر کے دیکھا جائے

    یہ سپنے تو بالکل سچے لگتے ہیں

    ان سپنوں کو سچا کر کے دیکھا جائے

    گھر سے نکل کر جاتا ہوں میں روز کہاں

    اک دن اپنا پیچھا کر کے دیکھا جائے

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Added to your favorites

    Removed from your favorites