آسماں آنکھ اٹھانے سے کھلا

کاشف حسین غائر

آسماں آنکھ اٹھانے سے کھلا

کاشف حسین غائر

MORE BYکاشف حسین غائر

    آسماں آنکھ اٹھانے سے کھلا

    راستہ خاک اڑانے سے کھلا

    زندگی دھوپ میں آنے سے کھلی

    سایہ دیوار اٹھانے سے کھلا

    ایسے کھلتا تھا کہاں رنگ جہاں

    تیری تصویر بنانے سے کھلا

    بات کیا بات بنانے سے بنی

    حال کیا حال سنانے سے کھلا

    کہیں آتا تھا یہاں سناٹا

    یہ تو رستہ ترے جانے سے کھلا

    رات کرتے ہیں ستارے کیسے

    رات بھر نیند نہ آنے سے کھلا

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY