اب منزل صدا سے سفر کر رہے ہیں ہم

احمد مشتاق

اب منزل صدا سے سفر کر رہے ہیں ہم

احمد مشتاق

MORE BYاحمد مشتاق

    اب منزل صدا سے سفر کر رہے ہیں ہم

    یعنی دل سکوت میں گھر کر رہے ہیں ہم

    کھویا ہے کچھ ضرور جو اس کی تلاش میں

    ہر چیز کو ادھر سے ادھر کر رہے ہیں ہم

    گویا زمین کم تھی تگ و تاز کے لیے

    پیمائش نجوم و قمر کر رہے ہیں ہم

    کافی نہ تھا جمال رخ سادۂ بہار

    زیبائش گیاہ و شجر کر رہے ہیں ہم

    RECITATIONS

    نعمان شوق

    نعمان شوق

    نعمان شوق

    اب منزل صدا سے سفر کر رہے ہیں ہم نعمان شوق

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY