اچھا ہے ان سے کوئی تقاضا کیا نہ جائے

جاں نثاراختر

اچھا ہے ان سے کوئی تقاضا کیا نہ جائے

جاں نثاراختر

MORE BYجاں نثاراختر

    اچھا ہے ان سے کوئی تقاضا کیا نہ جائے

    اپنی نظر میں آپ کو رسوا کیا نہ جائے

    ہم ہیں ترا خیال ہے تیرا جمال ہے

    اک پل بھی اپنے آپ کو تنہا کیا نہ جائے

    اٹھنے کو اٹھ تو جائیں تری انجمن سے ہم

    پر تیری انجمن کو بھی سونا کیا نہ جائے

    ان کی روش جدا ہے ہماری روش جدا

    ہم سے تو بات بات پہ جھگڑا کیا نہ جائے

    ہر چند اعتبار میں دھوکے بھی ہیں مگر

    یہ تو نہیں کسی پہ بھروسا کیا نہ جائے

    لہجہ بنا کے بات کریں ان کے سامنے

    ہم سے تو اس طرح کا تماشا کیا نہ جائے

    انعام ہو خطاب ہو ویسے ملے کہاں

    جب تک سفارشوں کو اکٹھا کیا نہ جائے

    اس وقت ہم سے پوچھ نہ غم روزگار کے

    ہم سے ہر ایک گھونٹ کو کڑوا کیا نہ جائے

    ویڈیو
    This video is playing from YouTube

    Videos
    This video is playing from YouTube

    نامعلوم

    نامعلوم

    نعمان شوق

    نعمان شوق

    RECITATIONS

    نعمان شوق

    نعمان شوق

    نعمان شوق

    اچھا ہے ان سے کوئی تقاضا کیا نہ جائے نعمان شوق

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY