اے جنوں پھر مرے سر پر وہی شامت آئی

آسی غازی پوری

اے جنوں پھر مرے سر پر وہی شامت آئی

آسی غازی پوری

MORE BYآسی غازی پوری

    اے جنوں پھر مرے سر پر وہی شامت آئی

    پھر پھنسا زلفوں میں دل پھر وہی آفت آئی

    مر کے بھی جذب دل قیس میں تاثیر یہ تھی

    خاک اڑاتی ہوئی لیلیٰ سر تربت آئی

    مسجدیں شہر کی اے پیر مغاں خالی ہیں

    مے کدے میں تو جماعت کی جماعت آئی

    وہ ہے کھڑکی میں ادھر بھیڑ نظر بازوں کی

    آج اس کوچہ میں سنتے ہیں قیامت آئی

    کبھی جی بھر کے وطن میں نہ رہے ہم آسیؔ

    روز میلاد سے تقدیر میں غربت آئی

    RECITATIONS

    فصیح اکمل

    فصیح اکمل

    فصیح اکمل

    اے جنوں پھر مرے سر پر وہی شامت آئی فصیح اکمل

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY